تازہ تریندیسی ٹوٹکےصحت

اروما تھراپی: خالص نباتاتی تیلوں کے ذریعے ایک فائدہ مند علاج

فرانسیسی ماہرین نے کہا ہے کہ پھولوں کی خوشبو اور عرق کا استعمال جلد کی قدرتی تری و تازگی، خوبصورتی، پرکشش رہنے کے ساتھ ساتھ انسانی دماغ کو ٹینشن سے دور رکھتا ہے۔

جدید سائنسی تحقیقات کی روشنی میں یہ ثابت ہوگیا ہے کہ اروما تھراپی خالص نباتاتی تیلوں کے ذریعے ہی زیادہ فائدہ مند ہے۔ بالخصوص ڈیپریشن اور اعصابی بیماریوں کے خلاف اس کا دنیا بھر میں استعمال ایک روایت بن گیا ہے۔

پیرس یونیورسٹی کے ماہرین کی تحقیق سے معلوم ہوا ہے کہ پھولوں کی خوشبوئیں اور عرقیات انسانی صحت اور خوبصورتی پر براہ راست اثرات مرتب کرتے ہیں۔ مختلف اقسام کے گھریلو پھولوں کو آپ روزمرہ کی روٹین میں استعمال کرسکتے ہیں۔

فرانسیسی ماہرین نے کہا ہے کہ پھولوں کی خوشبو اور عرق کا استعمال جلد کی قدرتی تری و تازگی، خوبصورتی، پرکشش رہنے کے ساتھ ساتھ انسانی دماغ کو ٹینشن سے دور رکھتا ہے۔

ماہرین کے مطابق چنبیلی سفید رنگ کی پنکھڑیوں پر مشتمل ایک نہایت خوشبو دار، خوب صورت اور حسین پھول ہے۔ اس پھول سے نکالا جانے والا تیل کئی وٹامنز پر مشتمل ہوتا ہے۔ چنبیلی کے تیل کا مساج ٹینشن اور اداسی کو دور کرتا ہے۔لیونڈر فلاور کاسمیٹکس میں استعمال ہونے والا بہترین خوش بودار پھول ہے۔ اس کا تیل انسانی تھکن اور ٹینشن کو دور کرتا ہے جبکہ سر میں اس کے مساج اور اس کی خوشبو سے نیند بھی بہتر آتی ہے۔

گلاب کا پھول کئی اقسام پر مشتمل ہے اور یہ ہرگھر اور ہر پارک میں بہ آسانی دستیاب ہے۔گلاب کے پھول میں وٹامن ای کثیر مقدار میں پایا جاتا ہے۔ گلاب کا عرق جلد کے روکھے پن کو ختم کرتا ہے، بند مساموں کو کھولنے میں مددگار ہے۔

روز میری کا تیل خصوصاً بالوں کی مصنوعات میں استعمال کیا جاتا ہے۔ روز میری کا تیل بالوں میں موجود اسکری کو ختم کرنے کے ساتھ ساتھ پٹھوں کو پرسکون رکھتا ہے، دماغی اور ذہنی دباؤ سے بھی نجات دلاتا ہے۔

خوشبو انسانی جذبات کو کنٹرول کرتی ہے، تحقیق کے مطابق خوشبویات انسانی دماغ پر انتہائی مثبت اثر ات مرتب کرتی ہیں۔ پروفیسر ڈاکٹر جان ٹی وکسٹڈ کا کہنا ہے کہ خوشبویات دماغ کے لمبک سسٹم کی کارکردگی کو درست کرنے میں معاون ہیں،اس نظام پر انسانی جذبات و احساسات کاانحصارہوتا ہے۔

خوف کو نفسیاتی بیماری کہا جاتا ہے۔اس کا علاج بھی فوری نہ کیا جائے تو انسان کی شخصیت تباہ ہوکر رہ جاتی ہے اور وہ فوبیاز میں مبتلاہوکر روز مرہ کام کاج سے بھی جاتا رہتا ہے۔تاہم خوف کی اقسام کو مدنظر رکھتے ہوئے خوشبویات کا چناؤکیا جانا چاہئے۔

یونیورسٹی آف کیلفورنیا کے شعبہ سائیکالوجی کے پروفیسر ڈاکٹر جان ٹی وکسٹڈ کی تحقیق کے مطابق نیند کے دوران خوشبویات کے ذریعے سے خوف کو کم کیا جاسکتا ہے۔ ماہرین کے مطابق لیونڈر،چنبیلی، نیازبوجیسے پھولوں کو اس مقصد کے لئے مفید پایا گیا ہے۔

1 2 3 4 5 6 7 8 9اگلا صفحہ

Leave a Reply

Back to top button