تازہ تریندیسی ٹوٹکےصحت

انار: طلسماتی قوتوں سے بھرپور جنت کا پھل

انار وٹامنر اور توانائی کا خزانہ ہے۔ اس میں کیلشیم، پوٹاشیم، فاسفورس، آئرن، ہائیڈروکلورک ایسڈ،فائٹو کیمیکلز،اینٹی آکسیڈنٹس، پولی فینول، کم کیلوریز اور وٹامن اے، بی اورسی موجود ہوتے ہیں۔ ڈائریا،پیچش اور جوڑوں کے درد میں انار کا استعمال کافی فائدہ مند ہے لیکن اس کا بہت زیادہ استعمال قبض کا باعث بھی بن سکتا ہے۔

اللہ تعالیٰ نے اپنے نیک اور فرمانبرداربندوں کے لیے کرہ ارض پرپانچ جنتی پھل پیدا کیے ہیں، جن کا ذکر قرآن مجید میں جنت کے منظر نامے میں واضح الفاظ میں کیا گیا ہے۔ ان کے بارے میں اللہ رب العالمین فرماتے ہیں،”اور جو لوگ ایمان لائے اور نیک عمل کرتے رہے، ان کو خوشخبری سنا دو کہ ان کے لیے (نعمت کے) باغ ہیں، جن کے نیچے نہریں بہہ رہی ہیں۔ جب انہیں ان میں سے کسی قسم کا میوہ کھانے کو دیا جائے گا تو کہیں گے، یہ تو وہی ہے جو ہم کو پہلے دیا گیا تھا۔ اور ان کو ایک دوسرے کے ہم شکل میوے دیئے جائیں گے اور وہاں ان کے لیے پاک بیویاں ہوں گی اور وہ بہشتوں میں ہمیشہ رہیں گے(سورۃ البقرۃ۔آیت نمبر25)۔ آج کی طب نے انہیں ”سپر فوڈ” قرار دے کر کہا ہے کہ مناسب مقدار میں یہ پھل کھانے والے کبھی بیمار نہیں ہوتے۔ ان پھلوں میں سے ایک پھل انار ہے۔انار کے حوالے سے ارشاد رب العزت ہے کہ،ترجمہ:ان میں میوے اور کھجوریں اور انار ہیں (سورۃ الرحمٰن۔ آیت نمبر68)

اللہ تعالیٰ نے انار کو جنت کا ایک پھل بتایا ہے، جو اہلِ زمین کے لیے ربِ کائنات کی خاص سوغات ہے۔ اسے پھلوں کا شہنشاہ بھی کہا جاتا ہے۔ جو طلسماتی طاقتوں اور خوبیوں کا مالک ہے۔ قدیم یونان و مصر میں لوگ اسے نسلی زرخیزی اور لافانی زندگی کی علامت سمجھتے تھے۔

ذائقے کے لحاظ سے انار کی تین اقسام ہیں۔ انار شیریں، انار ترش اور انار منجوش، یعنی کھٹا میٹھا۔ یہ تینوں ہی اقسام دوا اور غذائی خصوصیات سے بھرپور ہیں۔انار کے درخت کی چھال، پھول، پھل کا چھلکا اور یہاں تک کہ پتیاں بھی مفید ہیں۔ تحقیق نے ثابت کیا ہے کہ انارمیں حیران کن طبی فوائد موجود ہوتے ہیں۔ اس خوش ذائقہ پھل کے استعمال سے آپ کئی ایسے فوائد حاصل کرسکتے ہیں، جو آپ کو مہنگی دواؤں کے ذریعے حاصل ہوتے ہیں۔

انار وٹامنر اور توانائی کا خزانہ ہے۔ اس میں کیلشیم، پوٹاشیم، فاسفورس، آئرن، ہائیڈروکلورک ایسڈ،فائٹو کیمیکلز،اینٹی آکسیڈنٹس، پولی فینول، کم کیلوریز اور وٹامن اے، بی اورسی موجود ہوتے ہیں۔ ڈائریا،پیچش اور جوڑوں کے درد میں انار کا استعمال کافی فائدہ مند ہے لیکن اس کا بہت زیادہ استعمال قبض کا باعث بھی بن سکتا ہے۔

1 2 3 4اگلا صفحہ

Leave a Reply

Back to top button