بین الاقوامی

اُمید ہے پاکستان پُرامن افغانستان کیلئے اپنا کردار ادا کرے گا: امریکی وزیر خارجہ

امریکی وزیر خارجہ انتھونی بلنکن نے افغانستان میں پاکستان کے اہم کردار کو تسلیم کرتے ہوئے کہا کہ امریکا کو امید ہے کہ اسلام آباد پر امن افغانستان کے لیے اپنا کردار ادا کرے گا۔
غیر ملکی میڈیا کے مطابق امریکی وزیر خارجہ نے گزشتہ دنوں بھارت کا پہلا سرکاری دورہ کیا جہاں انہوں نے نریندر مودی، جے شنکر اور قومی سلامتی کے مشیر اجیت ڈوول سے ملاقاتیں کیں۔ ملاقاتوں میں امریکی وزیر خارجہ نے پاکستان، افغانستان، طالبان، چین اور بھارت میں انسانی حقوق کی صورتحال سمیت کئی عالمی اور علاقائی امور پر اظہار خیال کیا۔
دو روزہ دورہ مکمل کرنے والے بلنکن نے بھارتی ہم منصب ڈاکٹر ایس جے شنکر اور وزیر اعظم نریندرا مودی سے علیحدہ ملاقاتیں کیں۔
بھارتی میڈیا کو انٹرویو دیتے ہوئے انتھونی بلنکن نے افغانستان میں پاکستان کے اہم کردار کو تسلیم کرتے ہوئے کہا کہ امریکا کو امید ہے کہ اسلام آباد پر امن افغانستان کے لیے اپنا کردار ادا کرے گا۔ پاکستان کا افغانستان میں اہم کردار ہے اور ہمیں یقین ہے کہ پاکستان طالبان پر اپنا اثر و رسوخ استعمال کرتے ہوئے اس بات کو یقینی بنائے گا کہ طالبان ملک پر طاقت کے ذریعے قابض نہ ہوں اور پاکستان کا اثر و رسوخ ہے اور اس نے اپنا کردار ادا کرنا ہے اور ہم امید کرتے ہیں کہ وہ اس کو ادا کرے گا۔
اس سے قبل بھارتی ہم منصب کے ساتھ پریس کانفرنس میں بلنکن کا افغانستان کے حوالے سے پوچھے گئے سوال کے جواب میں کہنا تھا کہ امریکا افغان سکیورٹی فورسز اور کابل حکومت کی حمایت جاری رکھے گا۔ یقینی طور پر ہم گذشتہ ہفتوں میں جو کچھ بھی زمین پر دیکھ رہے ہیں وہ یہ ہے کہ طالبان افغانستان کے کئی صوبائی درالحکومتوں کو چیلنج کرتے ہوئے ضلعی مراکز کی جانب پیش قدمی کر رہے ہیں۔ ہم ان علاقوں میں طالبان کی جانب سے کیے گئے مظالم کی ان خبروں کو بھی دیکھ رہے ہیں جو کہ گہری تشویش کا باعث ہیں اور یقینی طور پر یہ پورے ملک کے لیے طالبان کے اچھے ارادے ظاہر نہیں کر رہے۔
امریکی وزیر خارجہ نے کہا کہ چین کی افغانستان میں بڑھتی ہوئی دلچسپی ’ایک مثبت چیز‘ ثابت ہوسکتی ہے۔ اگر بیجنگ افغان تنازع کے پرامن حل اور وہاں حقیقی نمائندگی والی حکومت چاہتے ہیں تو امریکا چین کے کردار کا خیرمقدم کرے گا۔

Leave a Reply

Back to top button