خبریںپاکستان سے

اے پی ایس سانحے کو کبھی بھلایا نہیں جا سکتا: آرمی چیف

ویب ڈیسک: سانحہ آرمی پبلک اسکول پشاور کی پانچویں برسی کے موقع پر پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے ڈائریکٹر میجر جنرل آصف غفور کی جانب سے آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کے حوالے سے بیان جاری کیا گیا۔
ڈی جی آئی ایس پی آر نے اپنے ٹوئٹ میں بتایا کہ جنرل قمر جاوید باجوہ کا کہنا ہے اے پی ایس سانحے کو کبھی بھلایا نہیں جا سکتا، حملے میں ملوث 5 دہشت گردوں کو ملٹری کورٹس کے ذریعے سزائے موت دی گئی۔
جنرل قمر جاوید باجوہ نے اے پی ایس سانحے کے شہداء کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا کہ بحیثیت قوم ہمیں دہشت گردی کو ختم کرنے میں کافی وقت لگا۔
انہوں نے مزید کہا کہ متحد ہو کر ہم پاکستان کو دیرپاامن اور خوشحالی کے ساتھ آگے لے جا سکتے ہیں۔
یاد رہے کہ 16 دسمبر 2014 کو کالعدم تحریک طالبان پاکستان کے 6 دہشت گردوں نے اے پی ایس پر بزدلانہ کارروائی کرتے ہوئے طلبہ سمیت 140 سے زائد افراد کو شہید کردیا تھا۔

جس کے بعد گزشتہ برس اپریل میں بچوں کے والدین کی درخواست اور ان کی شکایات کے ازالے کے لیے اُس وقت کے چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے ازخود نوٹس لیا تھا۔
بعد ازاں 9 مئی کو چیف جسٹس کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے ایک بینچ نے سانحے کی تحقیقات کے لیے پشاور ہائی کورٹ کے جج پر مشتمل کمیشن بنانے کے لیے زبانی احکامات جاری کیے تھے تاہم ہائی کورٹ کو تحریری احکامات موصول نہیں ہوئے جس کے باعث کمیشن تشکیل نہیں پایا تھا۔
عدالت عظمیٰ نے 5 اکتوبر 2018 کو کیس کی سماعت کے دوران کمیشن کی تشکیل کے لیے تحریری احکامات صادر کر دیئے تھے۔
جس کے بعد 14 اکتوبر 2018 کو پشاور ہائی کورٹ کے چیف جسٹس نے سپریم کورٹ کی ہدایات کی روشنی میں جسٹس محمد ابراہیم خان کی سربراہی میں اے پی ایس سانحے کی تحقیقات کے لیے عدالتی کمیشن تشکیل دیا تھا۔

Leave a Reply

Back to top button