HTV Pakistan
بنیادی صفحہ » انٹرویوز » بناوٹی لوگوں سے میل جول نہیں رکھتی: حاجرہ خان

بناوٹی لوگوں سے میل جول نہیں رکھتی: حاجرہ خان

پڑھنے کا وقت: 3 منٹ

معروف ٹی وی آرٹسٹ کی ثاقب اسلم دہلوی سے بات چیت
حاجرہ خان ایک ایسی فنکارہ کا نام ہے جو 2010ء سے اپنے کرئیر کو احسن طریقے سے لئے چل رہی ہیں۔ انہوں نے اپنے کرئیر میں کچھ عرصے کا وقفہ بھی لیا اور تقریباً دو سال پہلے ’’من مائل‘‘ ڈرامے سے کرئیر کا دوبارہ آغاز کیا۔ آج کل وہ ڈرامہ ’’ نواب زادیاں‘‘ کے شوٹ میں مصروف ہیں۔ گزشتہ دنوں ہم نے حاجرہ خان کے ساتھ ایک خصوصی نشست کا اہتمام کیا جس ہونے والی گفتگو ہم اپنے قارئین کے لئے پیش کر رہے ہیں۔

سوال: حاجرہ سب سے پہلے تو آپ ہمیں یہ بتائیں کہ کیا ہمارے ہاں ماڈلنگ کو خاص اہمیت دی جا رہی ہے؟
حاجرہ: دیکھیں! ہمارے ملک میں جہاں ڈرامہ پروان چڑھ رہا ہے وہیں فیشن انڈسٹری بھی اپنی مکمل آب و تاب سے ترقی کر رہی ہے۔ یہی وجہ ہے کہ آج ہمارے ملک میں ماڈلنگ کے شعبے کو بہت اہمیت دی جا رہی ہے، نئے لوگ آرہے ہیں، نئے نئے آئیڈیاز پیش کئے جا رہے ہیں جس کو دیکھ کر یہ کہا جا سکتا ہے کہ ابھی اس فیلڈ نے مزید ترقی کرنی ہے۔
سوال: فلم ’’پنکی میم صاحب‘‘ کے حوالے سے ہمارے قارئین کو کچھ بتائیں؟
حاجرہ : فلم ’’پنکی میم صاحب‘‘ میں مجھے آپ ایک مختلف انداز میں دیکھیں گے۔ میں نے اس میں ڈرامے سے ہٹ کر کریکٹر کرنے کی کوشش کی ہے اور مجھے امید ہے کہ میرا کام شائقین اس بار بھی پسند کریں گے۔

سوال: آپ کو کیسے معلوم ہو جاتا ہے کہ فلاں پروجیکٹ کامیاب ہو گا یا ناکام؟
حاجرہ: کامیابی یا ناکامی ہمارے ہاتھ میں نہیں ہوتی۔ یہ سب وقت پر منحصر ہوتا ہے۔ کبھی ہم جس پروجیکٹ پر دھیان نہیں دیتے وہ سب سے ہٹ چلا جاتا ہے اور کبھی ایسا ہوتا ہے کہ جس پرجیکٹ پر آپ بہت نے توجہ دی ہوتی ہے وہ آپ کی توقعات کے مطابق کامیابی حاصل نہیں کر سکتا۔
سوال:کیا آپ اپنے کریکٹر میں ڈوب کر کام کرتی ہیں؟
حاجرہ: اس فیلڈ میں مجھے کئی سال ہو چکے ہیں۔ میں اپنے کام کو ہمیشہ ایمانداری کے ساتھ سر انجام دیتی ہوں۔ یہی وجہ ہے کہ میرے کریکٹرز لوگوں کو پسند آتے ہیں۔ میں یہ نہیں کہوں گی کہ مجھے سب کچھ آتا ہے بس اتنا ہی کہوں گی کہ اسکرپٹ کو سمجھ کر پرفارمنس دینے کی کوشش کرتی ہوں۔

سوال: آپ ان دنوں کن ڈراموں کی شوٹنگ میں مصروف ہیں؟
حاجرہ: میں آج کل مختلف پروجیکٹس کر رہی ہوں جن میں ایک ’’ نواب زادیاں ‘‘ بھی شامل ہے۔ اس میں میری والدہ کا کریکٹر افشاں آپا کر رہی ہیں اور یہ تین بہنوں کی کہانی ہے۔
سوال: ’’نواب زادیاں‘‘ یقیناً ایک بہترین پلے ثابت ہو گا۔ اس میں آپ کا کریکٹر کیسا ہے؟
حاجرہ: ’’نواب زادیاں‘‘ میں میرا کریکٹر اب تک کا بہترین کریکٹر ہے۔ میں اس میں ایک سخت پولیس آفیسر کا کردار کر رہی ہوں جو نہ تو تھانے میں کمزور ہے اور نہ ہی اپنے گھر میں۔ یہ ایک ایسی لڑکی کا کریکٹر ہے جو لڑکا بن کر زندگی گزارتی ہے۔

سوال: آپ نے کئی کریکٹر کئے، آپ کو سب سے اچھا کریکٹر کون سا لگتا ہے ؟
حاجرہ: مجھے اپنا ہر وہ کریکٹر اچھا لگتا ہے جو میرے چاہنے والوں کے دل پر نقش ہو جائے۔
سوال: آپ کوکس قسم کے لوگ پسند ہیں؟
حاجرہ: مجھے حقیقی لوگ پسند ہیں۔ بناوٹی لوگوں سے میل جول نہیں رکھتی کیونکہ میں خود ایک سیدھی سادھی انسان ہوں۔

سوال: آپ مزید کس قسم کے کردار کرنا چاہتی ہیں؟
حاجرہ: ابھی تو مجھے نت نئے اچھوتے کردار کرنے ہیں، ہر منفرد کردار میں نظر آنا ہے ۔ کیونکہ میں نے خود پر کبھی کسی مخصوص کردار کی چھاپ نہیں لگنے دی۔ یہی وجہ ہے کہ میں کبھی اپنے کام سے مطمئن نہیں ہو سکتی کیونکہ فنکار جب مطمئن ہو جاتا ہے تو آگے بڑھنے کی سکت کھو دیتا ہے۔

جواب دیجئے