سپورٹس

تینوں فارمیٹ میں پاکستان کی نمائندگی کیلئے فٹ ہوں، کامران

پاکستان سپر لیگ میں عمدہ کارکردگی سے میلہ لوٹنے والے وکٹ کیپر بلے باز کامران اکمل نے تینوں فارمیٹ میں پاکستانی ٹیم کی نمائندگی کیلئے خود کو فٹ قرار دیا ہے۔

اسپورٹس جرنلسٹس ایسوسی ایشن آف لاہور کی تقریب میں مہمان کی حیثت سے مدعو کامران اکمل نے کہا کہ 35 سال کی عمر میں تینوں فارمیٹ کھیلنے کیلئے مکمل فٹ ہوں۔ مصباح تقریباً 43 سال کی عمر میں مکمل فٹ ہیں لیکن چند لوگوں کو میری عمر سے مسئلہ ہے۔

ایک سوال کے جواب میں پاکستان سپر لیگ میں سب سے زیادہ رنز بنانے والے بلے باز نے کہا کہ میں گزشتہ دو سیزن سے ڈومیسٹک کرکٹ میں عمدہ کھیل پیش کر رہا ہوں لیکن اب یہ سلیکٹرز پر منحصر ہے کہ وہ میرا قومی ٹیم کیلئے انتخاب کرتے ہیں یا نہیں۔

53 ٹیسٹ، 154 ون ڈے اور 54 ٹی20 انٹرنیشنل میچوں میں پاکستان کی نمائندگی کا اعزاز رکھنے والے کامران اکمل نے کہا کہ مایوس ہونے کے بجائے میں ڈومیسٹک سطح پر بہترین کرکٹ کھیلنے کی کوشش کرتا رہا اور اس میں میرے اعتماد نے بہت اہم کردار ادا کیا۔

مسلسل عمدہ کارکردگی کے باوجود ہارون رشید کی زیر سربراہی قائم گزشتہ سلیکشن کمیٹی کی جانب سے کوئی توجہ حاصل نہ کرنے پر مایوس کامران اکمل نے اس موقع پر نشاندہی کی کہ موجودہ چیف سلیکٹر نے ڈومیسٹک میچز کے دوران ان سے ملاقات کی اور ان کی کارکردگی بھی دیکھی۔

آخری مرتبہ اگست 2010 میں ٹیسٹ، جون 2013 میں ون ڈے اور اپریل 2014 میں ٹی20 میں قومی ٹیم کی نمائندگی کرنے والے کامران اکمل نے واضح کیا کہ ان کا موجودہ ٹی20 اور ون ڈے کپتان سرفراز احمد سے کوئی مقابلہ نہیں اور وہ ان کی قیادت میں بلے باز کی حیثیت سے کھیلنے کیلئے تیار ہوں۔

پاکستان سپر لیگ کے لاہور میں ہونے والے تاریخی فائنل میں غیر ملکی کھلاڑیوںکی شرکت کے حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے وکٹ کیپر بلے باز نے کہا کہ اس کا سہرا سابق آل راؤنڈر شاہد آفریدی اور پشاور زلمی کے مالک جایود آفریدی کو جاتا ہے جنہوں نے سیکیرٹی خدشات کے باوجود غیرملکی کھلاڑیوں کو صوبائی دارالحکومت میں فائنل کھیلنے کیلئے راضی کیا۔

Leave a Reply

Back to top button