Uncategorized

خبردار! زیادہ کام کرنے سے آپ گنجے ہو سکتے ہیں: تحقیق

ویب ڈیسک: جدید سائنسی تحقیق نے ایک اور ایسی اہم وجہ کا انکشاف کیا ہےجو مردوں کو درمیانی عمر میں ہی بالوں سے محروم کرنے کا باعث بن سکتی ہے، اور وہ ہے اپنا زیادہ وقت کام کرتے ہوئے گزارنا۔
جنوبی کوریا میں ہونے والی ایک طبی تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ ہر ہفتے 52 گھنٹے کام کرتے ہوئے گزارنا جہاں کیرئیر کے لحاظ سے مفید ثابت ہو سکتا ہے وہیں بالوں پر اس کے منفی اثرات مرتب ہوتے ہیں۔
سنگ کیونکوان یونیورسٹی کی تحقیق میں 20 سے 59 سال کی عمر کے 13 ہزار سے زائد ملازمین کا جائزہ 2013 سے 2017 کے درمیان لیا گیا۔
ان لوگوں کو 3 گروپس میں تقسیم کیا گیا ہے، ایک گروپ ان لوگوں کا تھا جس میں شامل افراد فی ہفتہ 40 گھنٹے روزگار کے لیے مصروف رہتے تھے، دوسرا وہ تھا جس میں شامل افراد کے دفتری اوقات 52 گھنٹے تک تھے جبکہ تیسرا گروپ 52 گھنٹے سے زائد وقت تک کام کرنے والوں کا تھا۔
محققین نے دریافت کیا کہ جو لوگ عمر کی تیسری یا چوتھی دہائی میں فی ہفتہ 52 گھنٹے کام کرتے ہیں، ان میں وقت سے پہلے گنج پن کا امکان 40 گھنٹے فی ہفتہ کام کرنے والوں کے مقابلے میں دوگنا زیادہ ہوتا ہے۔
اسی طرح 52 گھنٹے سے زیادہ کام کرنے والے افراد میں قبل از وقت گنج پن کا امکان مزید بڑھ جاتا ہے۔
تحقیق کاروں نے دریافت کیا کہ بہت زیادہ وقت دفاتر میں گزارنا تناﺅ کو بڑھانے کا باعث بنتا ہے جو پہلے ہی بالوں کی جڑوں کو نقصان پہنچانے والا عنصر مانا جاتا ہے۔
محققین کا کہنا تھا کہ نتائج سے ثابت ہوتا ہے کہ زیادہ وقت تک دفتری سرگرمیوں اور گنج پن کے درمیان تعلق موجود ہے۔
انہوں نے مزید بتایا کہ 20 یا 30 سال سے زائد عمر کے جوان افراد عمر کی اپنے دفتری وقت کو محدود کرکے گنج پن کے خطرے کو کسی حد تک کم کرسکتے ہیں۔
انہوں نے کہا کہ سابقہ تحقیقی رپورٹس میں یہ بات سامنے آچکی ہے کہ گنج پن کا عمل تناﺅ کے باعث تیز ہوتا ہے اور چوہوں پر کیے جانے والے تجربات میں بھی معلوم ہوا کہ تناﺅ سے بالوں کی نشوونما رک جاتی ہے اور بالوں کی جڑوں کو نقصان پہنچتا ہے۔

Leave a Reply

Back to top button