تازہ تریندیسی ٹوٹکےصحت

خوبانی کا تیل: انسانی صحت کا دوست، بیماریوں کا دشمن

خوبانی کے تیل میں وٹامن ای، وٹامن کے، اور متعدد طاقتور اینٹی آکسیڈینٹس جیسے کیفیک ایسڈ اور مختلف دیگر اجزاء موجود ہیں، ان سبھی کی وجہ اس تیل کے استعمال سے صحت کے حوالے سے مفید ثابت ہوتا ہے۔ یہ عام طور پر مساج کیلئے دنیا بھر میں بہترین سمجھا جاتا ہے۔ اس کے متنوع اور متعدد فوائد سے آپ کسے مستفید ہوتے ہیں، اب اس کا انحصار آپ پر ہے۔ ہم یہاں آپ کیلئے اس کے بے شمار فوائد میں سے چند ایک بیان کر دیتے ہیں۔

بالوں کو صحتمند رکھے!
بہت سے لوگ اس تیل کو اپنے بالوں اور کھوپڑی پر استعمال کرتے ہیں، کیوں کہ یہ بالوں کی کمزور جڑوں کو مضبوط بنا کر بالوں کو صحت مند رکھنے میں مددگار ثابت ہوتا ہے۔ اسے بالوں کے ماسک کے طور پر بھی استعمال کیا جا سکتا ہے، اسے کھوپڑی اور تالوں پر براہ راست لگایا جا سکتا ہے جس سے سوجن کی کم ہوتی ہے اور سر میں خشکی پیدا نہیں ہوتی۔

نیند آور ہے!
خوبانی کے مغز کے تیل کو اگر کنپٹیوں پر لگایا جائے تو پرُ سکون نیند آتی ہے۔اس کی مالش خوب اچھی طرح کنپٹیوں پر کی جائے اور انگلیوں کی مدد سے تیل کو جلد میں جذب کیا جائے تو بے حد فائدہ حاصل ہوتاہے۔

جلد کو کینسر سے بچاتا ہے
اینٹی آکسیڈنٹس سے بھرا ہوا خوبانی کا تیل جلد میں آکسیڈیٹیو تناؤ کو کم کرنے کے قابل ہے، جو ان لوگوں کے لئے خوشخبری ہے جو قبل از وقت عمر رسیدہ نظر آتے ہیں۔ یہ اینٹی آکسیڈنٹس جلد کو مضبوط کرنے میں مدد دیتے ہیں، جس سے جلد کے کینسر سے بچاؤ میں مدد ملتی ہے۔

کیل مہاسوں کا معالج!
مہاسوں کی جلن والی والی جگہ پر خوبانی کا تیل لگانے سے سوزش میں کمی آسکتی ہے اور غدودوں میں سیبم کا پیدا ہونا رُک جاتا ہے۔ جس کی وجہ سے آپ کی جلد کیل مہاسوں سے بچی رہتی ہے۔

دل کا محافظ!
خوبانی کے تیل کا استعمال قلبی نظام کے لئے بھی صحت مند ثابت ہو سکتا ہے۔ یہ تیل انسانوں میں مایوکارڈیل انفکشن کا خطرہ کم کرنے میں معاون ثابت ہوا ہے۔

نوٹ: یہ مضمون عام معلومات کے لیے ہے۔ قارئین اس حوالے سے اپنے معالج سے بھی ضرور مشورہ لیں۔

پچھلا صفحہ 1 2

Leave a Reply

Back to top button