تازہ ترینخبریںپاکستان سے

روس میں امن مشن کے نام سے مشقیں، پاکستان آرمی کے دستے بھی شریک

آئی ایس پی آر کے مطابق ان مشقوں میں بیلاروس بطورِ مبصر شرکت کررہا ہے، پاکستان آرمی کا ٹرائی سروسز دستہ ان مشقوں میں شریک ہے، ان مشقوں کا فوکس انسدادِ دہشت گردی آپریشن اور کاونٹر ٹیررازم کے شعبے میں بہترین پریکٹسز ہے۔

روس میں امن مشن کے نام سے مشقوں کا افتتاح ہوا، پاکستان آرمی کا ٹرائی سروسز دستہ ان مشقوں میں شریک ہے۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کی طرف سے جاری کردہ بیان کے مطابق ایس سی او پلیٹ فارم کے تحت روس میں امن مشن کے نام سے مشقوں کی افتتاحی تقریب کا انعقاد ہوا، مشقیں روس کے ڈونگوز ٹریننگ ایریا اورن برگ ریجن میں ہورہی ہیں۔

آئی ایس پی آر کے مطابق روسی مسلح افواج کے سنٹرل ملٹری ڈسٹرکٹ کے کمانڈر کرنل جنرل الیگزینڈر پولووچ افتتاحی تقریب کے مہمان خصوصی تھے، تمام شنگھائی تعاون تنظیم رکن ممالک کے فوجیوں نے مشقوں میں شرکت کی، مشقیں سخت چیلنجنگ فیلڈ ماحول میں منعقد کی گئیں۔

آئی ایس پی آر کے مطابق ان مشقوں میں بیلاروس بطورِ مبصر شرکت کررہا ہے، پاکستان آرمی کا ٹرائی سروسز دستہ ان مشقوں میں شریک ہے، ان مشقوں کا فوکس انسدادِ دہشت گردی آپریشن اور کاونٹر ٹیررازم کے شعبے میں بہترین پریکٹسز ہے۔

دوسری طرف پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) نے مزید بتایا کہ آذربائیجان میں کثیر الملکی فوجی مشقیں اختتام پذیر ہو گئی ہیں، 3بھائیوں کےعنوان سے مشقوں میں پاکستان، ترکی اور آذربائیجان نے شرکت کی۔

آئی ایس پی آر کے مطابق مشقوں میں انسداد دہشت گردی، خطرات اور ہائبرڈ صورتحال کی مشقیں کی گئیں۔ 2 ہفتے جاری رہنے والی مشقوں میں کمبائنڈ آپریشنز کیے گئے۔

آئی ایس پی آر کے مطابق اختتامی تقریب میں آذربائیجان کے وزیر دفاع ذاکرحسنوف مہمان خصوصی تھے، پاکستان سے میجرجنرل ممتاز حسین نے نمائندگی کی، اختتامی تقریب میں مختلف ہتھیاروں سے فائرنگ کا مظاہرہ کیا گیا، ڈرون، ہیلی کاپٹر اور چھوٹے ہتھیاروں کے استعمال کا بھی مظاہرہ کیا گیا، مشقوں میں سمندری آپریشن اورفضائی پہلوبھی شامل تھے۔

Leave a Reply

Back to top button