خبریںپاکستان سے

شیف گلزار نے اپنے سرپرجوتے کیوں مارے؟

ویب ڈیسک: سابق وزیراعظم میاں نواز شریف کے علاج کی غرض سے بیرون روانگی پر عوام ملے جلے ردعمل کا اظہار کر رہے ہیں، ان کے حامی اس اقدام پر خوش ہیں تو مخالفین سراپا احتجاج.
ایسے میں وہ شخصیات جن کو شائد ہی کبھی سیاسی حالات پر گفتگو کرتے سنا گیا ہو، وہ اپنے جذبات کا اظہار کر رہے ہیں. انہی لوگوں میں پاکستان کے مایہ شیف گلزار ہیں جو عموماً سیاسی معاملات پر اپنی رائے دینے سے گریز کرتے ہیں۔ تاہم سابق وزیراعظم نواز شریف کی علاج کے لیے بیرون ملک روانگی پر انہوں نے پہلی بارایک ویڈیو پیغام کے ذریعے انوکھے انداز میں احتجاج ریکارڈ کرایا ہے۔
شیف گلزار نے ویڈیو میں سب سے پہلے تو میاں صاحب کو مبارکباد دی کہ انہیں علاج کے لیے لندن جانے کی اجازت مل گئی۔ اس کے ساتھ ہی انہوں نے عدالتوں کو بھی اتنی جلدی انصاف فراہم کرنے پر مبارکباد دی۔
انہوں نے کہا کہ میں عدالتوں کے اتنے تیز انصاف فراہم کرنے پر بہت خوش ہوں اور میرا خوشی منانے کا انداز نہایت انوکھا ہے۔
شیف گلزار نے طنزیہ انداز میں کہا کہ میں جب خوشی مناتا ہوں تو اپنے سر پر جوتا مارتا ہوں۔ اور وہ ویڈیو کے دوران گاہے بگاہے اپنے سر پر جوتے مارتے رہے.
انہوں نے کہا اب مجھے امید ہے کہ جو غریب لوگ جیلوں میں ہیں انہیں بھی بہت جلد انصاف ملے گا۔ جو لوگ اس وقت مہنگائی کی وجہ سے پریشان ہیں، خود کشیاں کررہے ہیں، گزارہ کرنے کے لیے اپنے بچے بیچ رہے ہیں شاید اب انہیں بھی ریلیف مل جائے گا۔
شیف گلزار نے نہایت دکھ بھرے انداز میں کہا ہمارے یہاں جو پولیس کا نظام رائج ہے اور لوگوں کے ساتھ جو بھی نا انصافیاں ہوتی ہیں جن لوگوں کے پاس پیسے ہوتے ہیں وہ رشوت دے کر چھوٹ جاتے ہیں اور جو لوگ پیسے نہیں دے سکتے وہ اذیت کا شکار ہوتے ہیں اور بالآخر مر جاتے ہیں لہذٰا اب شاید ایسے لوگوں کو بھی ریلیف مل جائے گا۔
آخر میں شیف گلزار نے کہا ان کے پاس کہنے کو ابھی بھی بہت کچھ ہے لیکن وہ اپنی بات کا اختتام اس گانے پر کریں گے ’’میں خوش ہوں میرے آنسوؤں پر نہ جانا، میں تو دیوانہ دیوانہ دیوانہ‘‘ اللہ ہی حافظ ہے۔

Leave a Reply

Back to top button