تازہ تریندیسی ٹوٹکےصحت

لیموں: آپکو کو ہرگز بوڑھا نہیں ہونے دیگا …… بشرطیکہ

لیموں کے کیمیائی تجزیہ سے یہ بات سامنے آئی ہے کہ اس میں مندرجہ ذیل اجزاء ہوتے ہیں: حیاتین سی: 30 ملی گرام، کیلشیم: 20 گرام، فاسفورس: 14 ملی گرام، حرارے: 20 گرام، ان اجزاء کے علاوہ پوٹاشیم اور فولاد بھی پایا جاتا ہے جبکہ لیموں میں ”سٹرک ایسڈ“جس قدر پایا جاتا ہے اتنا کسی اور پھل میں نہیں ہوتا۔

لیموں کا تعلق رس دار پھلوں کے خاندان سے ہے ان گنت فوائد کے لحاظ سے قیمتی پھلوں کا بادشاہ ہے قدرت نے اسکے اندر سٹرک ایسڈ پوٹاشیم فولاد فاسفورس اور وٹامنز اے اور ای کا خزانہ چھپا رکھا ہے یہ گوست بنانے والے نشاستہ دار اور روغنی اجزاکا قیمتی مجموعہ اور وٹامن سی کا خزانہ ہے اسکا چھلکا رس اور بیج ہر چیز میں غذائی اور دوائی اجزا اہنے اندر چھپائے ہوئے ہے ضرورت کے مطابق لیموں کے پھل کے علاوہ اس کے پتے بھی استعمال کیا جاتا ہے لیموں میں تھوڑی سی تیزابی خاصیت پائی جاتی ہے رسدار پھلوں میں لیموں دنیا بھر میں پیداوار کے لحاظ سے تیسرے نمبر پر ہے

لیموں کی کاشت کب اور کیسے ہوئی؟:
مسوپوٹیمیا اور بابل کے کھنڈرات سے پتا چلتا ہے کہ چار ہزار سال قبل مسیح کے لوگ لیموں کا استعمال کیا کرتے تھے۔ پاکستان بھارت جزائر اور جنوبی یورپ کے ملکوں میں لیموں بکثرت پیدا ہوتا ہے۔ ہمارے ملک میں بھی اس کی بہت سی اقسام پائی جاتی ہیں۔اس کا رنگ زرد اور کچے لیمو ں کا رنگ سبز ہو تاہے۔ اس کا ذائقہ تر ش ہو تاہے۔

لیموں کے کیمیائی اجزا:
لیموں کے کیمیائی تجزیہ سے یہ بات سامنے آئی ہے کہ اس میں مندرجہ ذیل اجزاء ہوتے ہیں: حیاتین سی: 30 ملی گرام، کیلشیم: 20 گرام، فاسفورس: 14 ملی گرام، حرارے: 20 گرام، ان اجزاء کے علاوہ پوٹاشیم اور فولاد بھی پایا جاتا ہے جبکہ لیموں میں ”سٹرک ایسڈ“جس قدر پایا جاتا ہے اتنا کسی اور پھل میں نہیں ہوتا۔

لیموں کے خواص:

خون کی کمی
لیموں میں شامل وٹامن سی اینیمیا کے خلاف لڑتا تو نہیں مگر یہ آئرن کی طاقت کو ضرور بڑھاتا ہے جو اس بیماری کی روک تھام میں مددگار ثابت ہوتا ہے۔ ایک تحقیق کے مطابق وٹامن سی کے ساتھ آئرن کو کھانا ہمارے جسم میں آئرن کو جذب کرنا آسان کردیتا ہے۔ آئرن سے بھرپور غذاؤں میں لیموں کو چھڑکنے سے نہ صرف ذائقہ بڑھتا ہے بلکہ آئرن کے تمام فوائد بھی حاصل ہوتے ہیں۔

دل کو صحت مند بنائے
لیموں وٹامن سی کے حصول کا اچھا ذریعہ ہے، ایک لیموں سے 31 ملی گرام وٹامن سی ملتا ہے، جو کہ روزانہ درکار مقدار کا 51 فیصد حصہ ہے۔ طبی تحقیقی رپورٹس میں ثابت ہوا ہے کہ وٹامن سی سے بھرپور پھل اور سبزیاں کھانے سے امراض قلب کا خطرہ کم ہوتا ہے، مگر صرف وٹامن سی ہی دل کے لیے فائدہ مند نہیں بلکہ اس میں موجود فائبر اور نباتاتی کمپاؤنڈز بھی امراض قلب کا خطرہ نمایاں حد تک کم کرتا ہے۔

جسمانی وزن کنٹرول کرنے میں مدد دے
لیموں جسمانی وزن کم کرنے والی غذا ہے، ایک تحقیق کے مطابق لیموں میں موجود فائبر معدے میں جاکر پیٹ کو زیادہ دیر تک بھرے رکھتا ہے، اور ضروری نہیں کہ لیموں کو کھایا جائے، اسے مشروب کی شکل میں استعمال کرنا بھی یہی فائدہ پہنچاتا ہے۔ اسی طرح گرم پانی میں لیموں کا عرق ملا کر پینا بھی جسمانی وزن کم کرنے میں مدد دے سکتا ہے۔

نظام ہاضمہ بہتر کرے
لیموں میں موجود کاربوہائیڈریٹس اور فائبر معدے کی صھت کو بہتر بناتے ہیں جبکہ نشاستہ اور شکر کے ہضم ہونے کے عمل کو سست کرتے ہیں جس سے بلڈ شوگر لیول بھی کنٹرول میں آتا ہے۔

حاملہ خواتین کے لیے بھی مفید
لیموں میں موجود جز فولیٹ مختلف مسائل سے بچانے میں مدد دیتا ہے، فولیٹ وٹامنز میں بھی موجود ہوتا ہے مگر اسے کسی غذا جیسے لیموں کی شکل میں استعمال کرنا جسم کو اسے جذب کرنے میں زیادہ مدد دیتا ہے۔

کینسر کا خطرہ کم کرے
پھلوں اور سبزیوں پر مشتمل غذا کا زیادہ استعمال کچھ اقسام کے کینسر سے بچانے میں مدد دے سکتا ہے،ایک تحقیق میں دریافت کیا گیا کہ لیموں میں موجود نباتاتی کمپاؤنڈز انسداد کینسر خصوصیات رکھتے ہیں، تاہم اس حوالے سے مزید تحقیق کی ضرورت ہے۔

1 2 3 4 5 6اگلا صفحہ

Leave a Reply

Back to top button