تازہ تریندیسی ٹوٹکےصحت

مسالوں کی ملکہ: آپ کی صحت، تندرستی اور حسن کی محافظ

100گرام کالی مرچ میں وٹامن اے 10 فیصد، وٹامن سی 35 فیصد، وٹامن ای 30 فیصد، سوڈیم 3 فیصد، پوٹاشیم 27 فیصد، کیلشیم 44 فیصد، آئرن 360 فیصد، فاسفورس 25 فیصد، زنک 13 فیصد اور میگنیشیم 48.5 فیصد پائی جاتی ہے، جبکہ ان کے علاوہ بھی دیگر غذائی اجزا جیسے پیپرائن، سیلینیم، کرکیومین، بیٹا کروٹین، فینولک پائے جاتے ہیں۔

بریانی ہو یا قورمہ، کباب یا کوئی بھی سالن کالی مرچ بنادیتی ہے ہر کھانے کو لاجواب! کالی مرچ کو اگر پیس کر شامل کیا جائے تو لوگ اسے کھالیتے ہیں،لیکن اگر یہی کھانے میں ثابت آجائے تو اکثر لوگ اسے نکال دیتے ہیں۔لیکن اگرانہیں کالی مرچ کے فوائد کا پتہ چل جائے تو وہ اسے ڈھونڈڈھونڈ کر کھائیں اور مزے سے چباجائیں۔

مسالوں کی ملکہ کہلائی جانے والی کالی مرچ دنیا بھر میں بآسانی دستیا ب ہے۔ یہ دراصل ایک بیل میں پھل کی صورت اُگتی ہے، جسے خشک کرنے کے بعد مسالے کے طور پر استعمال کیا جاتا ہے۔ صدیوں سے کھانوں میں استعمال ہونے والی کالی مرچ نہ صرف کھانے کا ذائقہ دوبالاکرتی ہے بلکہ ہمارے جسم میں جاکر ہمیں کئی اقسام کی بیماریوں اور نقصان دہ جراثیم سے محفوظ رکھتی ہے۔ کالی مرچ کو قبل از مسیح میں بطور دوا استعمال کیا جاتا تھا۔

کالی مرچ میں پائے جانے والے کیمیائی اجزا:
100گرام کالی مرچ میں وٹامن اے 10 فیصد، وٹامن سی 35 فیصد، وٹامن ای 30 فیصد، سوڈیم 3 فیصد، پوٹاشیم 27 فیصد، کیلشیم 44 فیصد، آئرن 360 فیصد، فاسفورس 25 فیصد، زنک 13 فیصد اور میگنیشیم 48.5 فیصد پائی جاتی ہے، جبکہ ان کے علاوہ بھی دیگر غذائی اجزا جیسے پیپرائن، سیلینیم، کرکیومین، بیٹا کروٹین، فینولک پائے جاتے ہیں۔

کالی مرچ کے فوائد:

نظام ہاضمہ میں بہتری:
تحقیق سے پتہ چلا ہے کہ کالی مرچ ہاضمہ میں معاون پینکریاٹک انزائمزپر مثبت اثر ڈالتی ہے، جس سے تمام تر ہاضمے کا عمل بہتر ہوجاتاہے، اسی لیے کالی مرچ کا خوراک میں زیادہ استعمال معدے کیلئے بہت فائدہ مند ہوتاہے۔ یہ قبض اور گیس کی شکایت کوبھی ختم کرنے میں مدد دیتی ہے اور جسم میں ہونے والے درد کو رفع کرتی ہے۔

کینسر کے بچاؤ میں مدد گار:
مطالعوں سے ثابت ہوا ہے کہ کالی مرچ میں موجود Piperineکینسر کی کئی اقسام کے خلا ف حفاظتی سرگرمیاں انجام دیتا ہے۔ پیپرائن دیگر غذائی اجزا جیسے کہ سیلینیم، کرکیومین، بیٹا کروٹین اور وٹامن بی کو آنتوں میں جذب کرنے کے عمل کو تیز کرتاہے۔ یہ اجزا صحت کو برقرار رکھنے اور کینسر سے تحفظ میں مدد دیتے ہیں۔ کینیڈا میں کی جانے والی ایک تحقیق کے مطابق کینسر کے بچاؤ میں کالی مرچ میں موجود پیپرائن بہت کام آتاہے۔ یہ آنت پر پڑنے والے دباؤ کو کم کرتا اور کولون کینسر سے بچاتاہے۔

بلڈپریشر کا کنٹرول:
بلڈ پریشر کو نچلی سطح پر رکھنے میں بھی پیپرائن کام آتاہے۔ سلوواکیہ میں کی جانے والی تحقیق کے مطابق کالی مرچ کھانے سے بڑھتے ہوئے بلڈ پریشر کو کنٹرو ل کیا جاسکتاہے۔

وزن میں کمی:
تحقیق سے ثابت ہے کہ کالی مرچ میں موجود پیپرائن سے آ پ کو چھینکیں آتی ہیں اور یہ موٹے خلیوں کو پیدا ہونے کے خلاف مزاحمت کرتاہے، جس سے وزن میں کمی لانے کا ہدف پوراکیا جاسکتا ہے۔ ایک تحقیق کے مطابق موٹاپے سے متعلق مسائل کو حل کرنے کیلئے کالی مرچ متبادل کے طور پر استعمال ہوسکتی ہے۔ ڈائٹنگ میں کالی مرچ کے استعمال کا مشورہ اس لیے بھی دیا جاتاہے کہ اس کے ایک چمچ میں صرف 8کیلوریز ہوتی ہیں۔ اسی لئے اسے چکن یا گرلڈ سبزیوں پر چھڑک کر کھایا جاتاہے۔

1 2 3اگلا صفحہ

Leave a Reply

Back to top button