تازہ ترینجرم کہانیخبریںپاکستان سے

وزیر اعظم کی ہدایت پر پنڈورا پیپرز کی تحقیقات کیلئے تین رکنی سیل قائم

وزیراعظم عمران خان نے ہدایت کی کہ پینڈورا پیپرز میں شامل پاکستانیوں سے مکمل تحقیقات کی جائے۔ قومی دولت ملک سے باہر لے جانے والے کسی رعایت کے مستحق نہیں۔ تحریک انصاف کی حکومت بلاامتیاز احتساب پر یقین رکھتی ہے۔

پنڈورا پیپرز کا معاملہ سامنے آنے کے بعد وزیراعظم عمران خان نے 3 رکنی سیل قائم کر دیا۔

یاد رہے کہ گزشتہ روز پانامہ پیپرز کے بعد نئے مالیاتی سکینڈل پنڈورا پیپرز کی ہوشربا تفصیلات جاری کردی گئی تھیں جس میں 700سے زائد پاکستانی بے نقاب ہوگئے تھے، ان میں پاکستان سے شوکت ترین، مونس الہیٰ، شرجیل میمن، عبدالعلیم خان، فیصل واوڈا، اسحاق ڈارکے بیٹے علی ڈار، شعیب شیخ، سابق معاون خصوصی وقار مسعود کے بیٹے اور سینکڑوں غیر ملکی شخصیات شامل تھیں۔

دوسری طرف پنڈورا پیپرز کا معاملہ سامنے آنے کے بعد وزیراعظم معائنہ کمیشن کے تحت 3 رکنی سیل قائم کر دیا گیا۔ سیل پنڈورا پیپرز کی تحقیقات کرے گا، فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) ، وفاقی تحقیقاتی ادارے (ایف آئی اے) اور نیب کے نمائندے سیل کا حصہ ہوں گے۔

وزارت قانون سیل کے تمام قانونی امور دیکھے گی۔ سیل پنڈورا پیپرز میں آنے والے تمام پاکستانیوں کے ناموں کے اثاثوں کی چھان بین کرے گا، سیل دیکھے گا آیا ان افراد نے ٹیکس دیا یا چوری کی۔

سیل دیکھے گا کہ ان افراد کی آمدن کے ذرائع جائز تھے، جبکہ اس بات کی بھی تحقیقات کی جائے گی کہ ان افراد نے اثاثے ڈکلیئر کیے یا نہیں، اس بات کی بھی جائزہ لیا جائے گا کہ منی لانڈرنگ ہوئی یا نہیں۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ وفاقی وزراء، اٹارنی جنرل پر مشتمل کمیٹی نے وزیراعظم عمران خان کو ابتدائی رپورٹ پیش کی۔

وزیراعظم عمران خان نے ہدایت کی کہ پینڈورا پیپرز میں شامل پاکستانیوں سے مکمل تحقیقات کی جائے۔ قومی دولت ملک سے باہر لے جانے والے کسی رعایت کے مستحق نہیں۔ تحریک انصاف کی حکومت بلاامتیاز احتساب پر یقین رکھتی ہے۔

دوسری طرف وزیراطلاعات فواد چودھری نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر بتایا کہ پنڈورا لیکس کی تحقیقات کیلئے وزیراعظم عمران خان نے وزیر اعظم انسپکشن کمیشن کے تحت اعلیٰ سطحی سیل قائم کیا ہے۔ یہ سیل پنڈورا لیکس میں شامل تمام افراد سے جواب طلبی کرے گا اور حقائق قوم کے سامنے رکھیں جائینگے۔

گزشتہ روز وزیراعظم عمران خان نے پینڈورا پیپرز کا معاملہ سامنے آنے کے بعد ردعمل دیتے ہوئے کہا ہے کہ حکومت پنڈورا پیپرز میں ملوث تمام پاکستانیوں کی تحقیقات کرے گی۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر پیغام جاری کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ اشرافیہ کی غیر قانونی دولت منظرعام پرلانےکوسراہتے ہیں، جو بھی قصوروار ہوااس کیخلاف کارروائی کی جائے گی۔ حکومت پنڈورا پیپرزمیں ملوث تمام پاکستانیوں کی تحقیقات کرے گی جبکہ منی لانڈرنگ،ٹیکس چوری کیلئے آف شور کمپنیاں جنت ہیں۔ میں نے 2 دہائیاں اسی بنیاد اور یقین پرجدوجہد کی ، ممالک غریب نہیں ہیں لیکن کرپشن غربت کاسبب بنتی ہے، کرپشن کے وجہ سےغریب ممالک کی کرنسی بے قدر ہوچکی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ جس طرح ایسٹ انڈیا کمپنی نے ہندوستان کی دولت لوٹی، اسی طرح ترقی پذیردنیا کےحکمران اوراشرافیہ بھی یہی کررہے ہیں۔

وزیراعظم نے ایک اور ٹوئٹ میں کہا کہ اگر اس کو ایسے چھوڑا گیا تو امیر اور غریب ریاستوں کے درمیان عدم مساوات میں اضافہ ہوگا، اس سے بعد میں غربت میں بھی اضافہ ہوگا۔ جس کے نتیجے میں غریب سے امیر ریاستوں میں معاشی نقل مکانی کا سیلاب آئے گا جبکہ دنیا بھر میں مزید معاشی اور سماجی عدم استحکام پیدا ہوگا۔

Leave a Reply

Back to top button