HTV Pakistan
بنیادی صفحہ » خبریں » جرم کہانی » پاکستانی لڑکیوں کو چین میں فروخت کرنے والا گینگ بے نقاب

پاکستانی لڑکیوں کو چین میں فروخت کرنے والا گینگ بے نقاب

پڑھنے کا وقت: 2 منٹ

پاكستانی لڑكیوں كو شادیوں كا جھانسہ دے كر چین اسمگل كرنے والے گینگ نے دوران تفتیش انكشاف كیا ہے كہ وہ لڑكیوں سے آن لائن دوستی سے آغاز كرتے اور اسلام كو بطور مذہب قبول كرنے كی یقین دہانی كرانے كے بعد لڑكی كو پوری طرح اپنے جال میں پھنسا لیتے ہیں۔

ایف آئی اے انسداد انسانی اسمگلنگ اسیل ذرائع نے ایچ ٹی وی پاکستان كو بتایا كہ گزشتہ كچھ دنوں میں ایف آئی اے نے ملک بھر كے مختلف حصوں میں چھاپے مار كر 30 سے زائد ایسے چینی باشندوں كو گرفتار كیا ہے جو پاكستانی لڑكیوں كو شادی كا جھانسہ دے كر چین منتقل كردیتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: خواتین کو جھانسہ دیکر شادیاں کرنے والے مزید 11چینی گرفتار

ذرائع كا كہنا تھا كہ 30 سے زائد چینی باشندوں سے تفتیش كے بعد انكشاف ہو اہے كہ اس گینگ كے افراد پاكستانی لڑكیوں سے آن لائن دوستی كرتے ہیں اور لڑكی كا اعتماد حاصل كرنے كے لیے مسلمان ہونے كا جھوٹا دعوی كرتے ہیں جس كے بعد لڑكی یا اس كے گھر والے مكمل طور پر چینی باشندوں كے چنگل میں پھنس جاتے ہیں۔

ذرائع كا كہنا تھا كہ چینی باشندے دوستی كے دوران ان لڑكیوں كا انتخاب كرتے ہیں جو متوسط طبقے سے تعلق ركھتی ہو، دوستی كے بعد چینی باشندے بھاری مالیت كے تحائف بھی لڑكیوں اور ان كے گھر والوں كو فراہم كرتے ہیں ، دوران تفتیش اس بات كا بھی انكشاف ہوا ہے كہ اس گینگ میں ملوث تمام چینی باشندے بے روزگار ہیں جو لڑكیوں كو جعلی شادیوں كے بہانے چین اسمگل كرتے ہیں اور لڑكیوں كو مختلف افراد كے ہاتھوں فروخت كردیا جاتا ہے۔

ایف آئی اے ذرائع كا كہنا تھا كہ دوران تفتیش پتا چلا ہے كہ متعدد لڑكیاں چینی باشندوں سے شادیاں كركے چین جاچكی ہے جن كا ڈیٹا مرتب كیا جارہا ہے تاكہ پتا چلایا جاسكے كہ جو لڑكیاں چین جاچكی ہیں وہ كن حالات میں زندگی گزار رہی ہیں ، ایف آئی اے ذرائع كا كہنا تھا كہ چائنہ میں پاكستان ایمبیسی كو بھی ساری صورتحال سے آگاہ كردیا گیا تاكہ متعلقہ حكام پاكستانی لڑكیوں كی حفاظت كو یقینی بنانے كے لیے اپنا كردار ادا كرسكیں ۔

جواب دیجئے