تازہ ترینخبریںپاکستان سے

پیسہ لوٹ کر باہر لے جانےوالوں سے مفاہمت نہیں کرینگے

وزیر اعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ پاکستان کے عوام کا پیسہ لوٹ کر باہر لے جانےوالوں سے مفاہمت نہیں کرینگے، جنہوں نے اقتدار میں آکر پیسہ چوری کیا ان سے نہ مفاہمت ہوگی اور نہ ہی انہیں این آر او دیں گے۔

وزیر اعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ پاکستان کے عوام کا پیسہ لوٹ کر باہر لے جانےوالوں سے مفاہمت نہیں کرینگے، جنہوں نے اقتدار میں آکر پیسہ چوری کیا ان سے نہ مفاہمت ہوگی اور نہ ہی انہیں این آر او دیں گے۔

وزیراعظم عمران خان نے میانوالی میں میانوالی تا سرگودھا دو رویہ سڑک کا افتتاح کردیا۔

اس موقع پر میانوالی میں جلسے سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم عمران خان نے کہا کہ ہر مہذب معاشرہ چوروں کو جیل میں ڈالتا ہے ان سے مفاہمت نہیں کرتا، ملک اس لیے غریب ہوتے ہیں کہ بڑا چور آزاد اور چھوٹا جیل میں ہوتا ہے۔

وزیر اعظم نے کہا کہ مہنگائی صرف ملک کا نہیں دنیا بھر کا مسئلہ ہے، اس وقت دنیا کا سب سے بڑا مسئلہ مہنگائی ہے، دنیا میں مہنگائی اس لیے ہوئی کہ کورونا وباء آئی، کورونا کی وجہ سے کاروبار بند ہوا جس سے مہنگائی ہوئی۔

انہوں نے کہا کہ لاک ڈاؤن کی وجہ سے امریکا میں تاریخ کی سب سے زیادہ مہنگائی ہوئی، عالمی سطح پر قیمتوں میں اضافہ ہوا تو بدقسمتی سے پاکستان میں بھی قیمتیں بڑھیں، اس وقت ہمیں بھی اور دنیا کو بھی مشکل وقت کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ 50 ہزار روپے سے کم آمدنی والوں کو راشن پر 30 فیصد رعایت دیں گے، کامیاب پاکستان پروگرام میں 20 لاکھ خاندانوں کو بغیر سود قرض دیں گے جبکہ پروگرام میں گھر بنانے کے لیے بغیر سود قرض ملے گا۔

وزیر اعظم عمران خان نے یہ بھی کہا کہ ہیلتھ انشورنس کارڈ مارچ تک پنجاب کے تمام خاندانوں کو ملے گا، پنجاب میں ہر خاندان کے پاس 10 لاکھ روپے تک ہیلتھ انشورنس ہوگی۔

عمران خان نے کہا کہ غریب لوگوں کو سب سے بڑا مسئلہ علاج کا ہوتا ہے، سب سے زیادہ پیسا طلباء کے اسکالرشپس پر خرچ کررہے ہیں، وعدہ کیا تھا کہ پاکستان وہ ملک بنے گا جو کسی کے سامنے نہیں جھکے گا، آپ دیکھیں گے کہ ایک آزاد ملک اپنے پیر پر کھڑا ہوگا اور فیصلے کرے گا۔

انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان اب وہ ملک ہے جو عوام کی بہتری کے مطابق فیصلے کرے گا، ہم سب سے بات چیت کے لیے تیار ہیں، سب کے ساتھ بیٹھ کر اپنے مسئلے حل کرنے کیلئے تیار ہیں، وزیرستان ہو یا بلوچستان سب کے ساتھ بات چیت سے مسائل حل کریں گے۔

ان کا کہنا ہے کہ قانون کی حکمرانی اور فلاحی ریاست ان دو نظریوں پر پاکستان کو عظیم بنائیں گے، دنیا بھر میں مثال دی جاتی ہے کہ پاکستان بہتر انداز میں کورونا وباء سے نمٹا، مہنگی بجلی کے تمام معاہدے ہم سے پہلے کے کیے گئے ہیں، کوشش کررہے ہیں کہ ٹیوب ویلوں کو سولر پر منتقل کریں، بلدیاتی الیکشن آرہا ہے، کارکن تیاری کریں اور اس الیکشن میں بھرپور شرکت کریں۔

عمران خان نے کہا کہ آج اگر وزیراعظم ہوں تو میانوالی کے کارکنوں کی وجہ سے ہوں، حکومت کے پانچ سال مکمل ہوں گے تو دعویٰ ہے کہ میانوالی میں تاریخی ترقی ہوگی، میانوالی کے لوگ اس وقت ساتھ چلے جب میرے ساتھ کوئی نہیں تھا۔

جلسے سے خطاب میں وزیر اعظم نے یہ بھی کہا کہ میانوالی کے لوگوں کے احسان کا خدمت کر کے جواب دوں گا، ملک میں کبھی ایسی ترقی نہیں ہوئی کہ غریب طبقے کو ساتھ لے کر چلیں، میری کوشش ہے کہ پسماندہ علاقوں میں زیادہ ترقی ہو، میری زیادہ توجہ تعلیم اور اسکولوں کو بہتر کرنے پر ہے۔

انہوں نے کہا کہ میانوالی کے لوگوں کو تعلیم کے لیے ضلع سے باہر نہیں جانا پڑے گا، میانوالی سے مظفرگڑھ کی سڑک خستہ حال تھی۔

Leave a Reply

Back to top button