تازہ تریندیسی ٹوٹکےصحت

پیپرمنٹ: جسمانی ٹھنڈک اور دوا ساتھ ساتھ

اینٹی سیپٹک، اینٹی بیکٹریل، اینٹی انفلامیشن، اینٹی وائرل خصوصیات کے حامل پیپرمنٹ آئل میں مینتھول 29سے 48فیصد پایا جاتا ہے۔ مینتھین 20سے 31فیصد ہوتا ہے، ان کے علاوہ مینتھو فوران، لیمونین، پیولی گان، سائی نیول اور دیگر مرکبات پائے جاتے ہیں۔

پیپرمنٹPeppermint ایک سدا بہار پودا ہے۔ جس کا قد ایک میٹر تک بلند ہوتا ہے۔ اس کی جڑیں زیر زمین پھیلتی رہتی ہیں جن سے باآسانی نئے پودے جنم لیتے رہتے ہیں۔

سفید پیپر منٹ کے تنا اور پتے سبز رنگ کے ہوتے ہیں جبکہ سیاہ پیپر منٹ کے پتے گہرے سبز اور دندانہ دار اور تنا جامنی رنگ اور پھول سرخی مائل بنفشی ہوتے ہیں۔

بنیادی طور پر یہ پودا دو نسلوں کے اختلاط سے کاشت کیا جاتا ہے۔ اور 17ویں صدی سے پہلے یہ برطانیہ میں متعارف کروایا گیا۔ جبکہ مشرقی خطوں میں اس کی تاریخ ہزاروں سال پرانی ہے۔بعد ازاں اسے یورپ اور امریکہ میں پھیلایا گیا۔ لیکن اب اسے دنیا بھر میں کاشت کیا جاتا ہے۔ اس کا تیل زیادہ تر فرانس، برطانیہ، امریکہ، روس، بلغاریہ، ہنگری، مراکش اور چین میں کشید کیا جاتا ہے۔

پیپرمنٹ کی متعدد اقسام ہیں جیسے سپیئر منٹ، ایپل منٹ، پینی رائل، واٹر منٹ اور پائن ایپل منٹ وغیرہ۔ ان میں سے کچھ کو نباتی تیل کشید کرنے کیلئے استعمال کیا جاتا ہے۔ پیپرمنٹ کی جو اقسام شمالی خطوں میں کاشت کی جاتی ہیں، ان کو اعلیٰ ترین کوالٹی قرار دیا جاتا ہے۔

منٹس کو قدیم زمانہ سے چین اور جاپان میں کاشت کیا جا رہا ہے۔ مصر کے کچھ مقبروں سے ایک قسم کے پیپر منٹ کے شواہد ملے ہیں۔ یہ مقبرے 1000قبل مسیح سے تعلق رکھتے ہیں۔
مشرقی اور مغربی طریقہ ہائے علاج میں اسے متعدد بیماریوں کیلئے استعمال کیا جا رہا ہے۔

برٹش ہربل فارما کوپیا میں اسے درد، قولنج، تبخیر، زکام، حمل کے دوران قے، اور حیض کے درد کیلئے پیپرمنٹ تجویز کیا گیا ہے۔

پیپر منٹ میں پائے جانے والے کیمیائی اجزا:
اینٹی سیپٹک، اینٹی بیکٹریل، اینٹی انفلامیشن، اینٹی وائرل خصوصیات کے حامل پیپرمنٹ آئل میں مینتھول 29سے 48فیصد پایا جاتا ہے۔ مینتھین 20سے 31فیصد ہوتا ہے، ان کے علاوہ مینتھو فوران، لیمونین، پیولی گان، سائی نیول اور دیگر مرکبات پائے جاتے ہیں۔

پیپر منٹ کے فوائد:

اروماتھراپی میں استعمال:
پیپرمنٹ کے تیل کو اروماتھراپی میں استعمال کیا جاتا ہے۔ قدیم زمانہ میں چین اور جاپان میں اسے زکام، نزلہ اور کھانسی میں سنگھایا جاتا تھا۔

جلد کی حفاظت:
پیپر منٹ کا تیل جلد کو کیل مہاسوں اورداغ دھبوں سے نجات دلاتا ہے۔ جلد سوزش، داد، خارش وغیرہ کیلئے اکسیر ہے۔ اس کے روزانہ لگانے سے خارش وغیرہ چند روز میں ختم ہو جاتی ہے۔

دردوں کا علاج:
پٹھے اور جوڑوں میں کچھاؤ، اعصابی درد، پٹھوں میں درد ہو تو پیپر منٹ تیل کی مالش سے فوری اثرہوتا ہے اور درد سے آرام آتا ہے۔

نظام تنفس:
دافع تشنج صلاحیت کی بنا پر دمہ، برونکائٹس، بدبودار سانس، سائی نس کی سوزش، تشنجی کھانسی کی صورت میں پیپرمنٹ کے تیل کی بھاپ لینے سے افاقہ ہوتا ہے۔ یہ بلغم کو روکتا ہے۔

نظام ہضم:
درد قولنج، پیٹ میں اینٹھن، ضعف معدہ، تبخیر اور متلی کی صورت میں اس سے افاقہ ہوتا ہے۔

اعصابی نظام:
غشی، سر درد، ذہنی تھکاوٹ، درد شقیقہ، اعصابی دباؤ، اور سر چکرانے کی صورت میں اس کی خوشبو فوری آرام پہنچاتی ہے۔

پیپرمنٹ کے دیگر استعمال:
پیپر منٹ کو فارماسیوٹیکل انڈسٹری میں ادویات بنانے میں استعمال کیا جاتا ہے۔ جبکہ کاسمٹیٹکس انڈسٹری میں خوشبو کے طور پر، صابنوں، ٹوتھ پیسٹ، ڈیٹرجنٹس اور پرفیومز میں بھی شامل کیا جاتا ہے۔ پیپرمنٹ کو متعدد غذاؤں میں فلیورنگ کیلئے اور بالخصوص چیونگم میں استعمال کیا جاتا ہے۔ اسے متعدد مٹھائیوں اور تمباکو کا فلیور بنانے کیلئے بھی استعمال کیا جاتا ہے۔

نوٹ: یہ مضمون عام معلومات کے لیے ہے۔ قارئین اس حوالے سے اپنے معالج سے بھی ضرور مشورہ لیں۔

Leave a Reply

Back to top button