تازہ تریندیسی ٹوٹکےصحت

ہلدی بنائے آپکو حسین اور جواں ہمیشہ کیلئے

ہلدی میں بے پناہ غذائیت موجود ہے جس میں کاربوہائیڈریٹس، فائبر،چکنائی،پروٹین، سوڈیم،آئرن، فاسفورس، زنک، وٹامن سی، وٹامن ای، وٹامن کے، پوٹاشیم، کیلشیم، میگنیشیم، پروٹین،وائٹ مینائی اور زنک شامل ہیں۔

آجکل جرمنی میں سنہرا دودھ کے نام سے ایک زرد رنگ کے دودھ کی مانگ میں بہت اضافہ ہو رہا ہے۔ یہ سنہرا دودھ کیا ہے؟ یہ اصل میں ہلدی ملا دودھ ہے جو ایک سپر ٹانک کے طور پر مارکیٹ میں دستیاب ہے۔ حالانکہ ہلدی ملا دودھ برصغیر میں کئی صدیوں سے زیر استعمال ہے۔ قدیم چینی ادویات اور آیورویدک طریقہ علاج میں اس کا ستعمال عام ہے۔پاکستان میں بھی کوئی ایسا گھر نہیں ہوگا کہ جہاں مختلف انداز میں ہلدی کا استعمال نہ ہو رہا ہو۔

ہلدی (Turmeric) جس کا سائنسی Curcuma longa ہے اور یہ ادرک خاندان کا ایک پودا ہے۔ یہ پودے کی جڑ سے نکالی جاتی ہے۔ یہ جنوب مشرقی ہندوستان کا مقامی پودا ہے۔ اس کا اصلی رنگ قدرتی زردی مائل ہوتا ہے اور اس میں زیادہ چمک دمک نہیں ہوتی۔ہلدی میں بے شمار خوبیاں پائی جاتی ہیں۔ ہلدی میں ایک جزو کرکومن (curcumin) بہت اہم ہے یہ بہت سی اقسام کے کینسر روکنے میں مددگار ہے۔ یہ بڑی آنت، پروسٹیٹ، پھیپڑے، جگر معدے، سینہ، بیضہ دانی اور دماغ کے سرطان، رسولی میں خون کی نئی رگیں بننے کا عمل روک دیتا ہے۔

زرد رنگ، ذائقے میں تلخ جڑی بوٹی ہلدی کی افادیت و خصوصیات لاتعداد ہیں۔ ایشیائی ممالک کے بعد اب یورپ میں بھی اس کی دھوم مچی ہوئی ہے، جہاں کافی سے لے کرکھانوں میں اس کا استعمال عام ہورہا ہے۔امریکی کیمیکل جرنل کے مطابق ہلدی میں لاتعداد اینٹی آکسیڈنٹ، اینٹی وائرل، اینٹی بیکٹیریل اور اینٹی فنگل خصوصیات پائی جاتی ہیں۔ یہ سوزش اور جینیاتی بیماریوں میں بھی مفید ہے۔

ہلدی میں پائے جانے والے کیمیائی اجزا:
ہلدی میں بے پناہ غذائیت موجود ہے جس میں کاربوہائیڈریٹس، فائبر،چکنائی،پروٹین، سوڈیم،آئرن، فاسفورس، زنک، وٹامن سی، وٹامن ای، وٹامن کے، پوٹاشیم، کیلشیم، میگنیشیم، پروٹین،وائٹ مینائی اور زنک شامل ہیں۔

ہلدی کے فوائد:
ہلدی صرف کھانے کا رنگ اور ذائقہ ہی بہتر نہیں کرتی بلکہ جراثیم کش ہونے کے ساتھ ساتھ مضبوط اینٹی آکسائیڈنٹ مصالحہ بھی ہے۔اس کے چند فوائد درج ذیل ہیں۔

جلد جگمگائے:
ہلدی جلد کے مردہ خلیات کی صفائی کے لیے بہترین ہے اور یہ جلد کو جوانی جیسی چمک دینے میں مدد دیتی ہے۔ ہلدی کو دودھ یا دہی میں ملائیں اور اچھی طرح مکس کرکے چہرے یا جسم کے کسی حصے پر لگائیں۔ اسے خشک ہونے تک کے لیے چھوڑ دیں اور نیم گرم پانی سے صاف کردیں، جبکہ اس دوران چہرے کو نرمی سے مساج بھی کرتے رہیں۔

انفیکشن سے تحفظ:
ہلدی طاقتور اینٹی آکسائیڈنٹ اور جراثیم کش مصالحہ ہے جو مختلف انفیکشنز جیسے ای کولی (جو کہ شدید انفیکشن، معدے کے درد، ہیضے اور دیگر مسائل کا باعث بنتا ہے) کی روک تھام کرتا ہے۔

جگر کی صفائی:
ہم عام طور پر جو کھاتے ہیں، وہ غذا اکثر کیمیکلز، کیڑے مار ادویات اور دیگر آلودگی کی زد میں آتی ہے اور اس کے زہریلے اثرات جگر اور گردوں سمیت جسمانی نظام میں اکھٹے ہوجاتے ہیں جو کہ مختلف امراض کا باعث بنتے ہیں، تاہم ہلدی کا استعمال ان اثرات کو ختم کرتا ہے اور جگر کی صفائی کرکے اسے ٹھیک رکھتا ہے۔

1 2 3 4اگلا صفحہ

Leave a Reply

Back to top button