دنیا

رفح میں ممکنہ اسرائیلی فوجی آپریشن، فرانسیسی صدر نے مخالفت کردی

رفح میں پناہ لیے لاکھوں فلسطینیوں کے خلاف ممکنہ اسرائیلی فوجی آپریشن کی فرانس کے صدر ایمانوئل میکرون کی جانب سے مخالفت کی گئی ہے۔

بین الاقوامی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق فرانسیسی صدر کا اسرائیلی وزیراعظم سے ٹیلیفونک گفتگو کے دوران کہنا تھا کہ رفح آپریشن عالمی انسانی حقوق کی خلاف ورزی اور علاقائی کشیدگی میں اضافے کا باعث بنے گا۔

انہوں نے کہا کہ رفح آپریشن سے بڑے پیمانے پر انسانی تباہی اور جبری بیدخلی ہوگی۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز بھی اسرائیلی فوج نے جنوبی غزہ کے علاقے رفح اور خان یونس پر فضائی حملہ کر کے 103 فلسطینیوں کو شہید کر دیا تھا۔

اسرائیلی فوج کی جانب سے غزہ میں خوں ریز کارروائیوں کا سلسلہ جاری ہے، گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران حملوں میں مزید 103 فلسطینیوں کو شہید کر دیا گیا، اس دوران اسرائیلی فوج نے رفح اور خان یونس میں وحشیانہ فضائی حملے کیے۔

جنوبی غزہ میں خان یونس کے سب سے بڑے صحت مرکز کے اندر پناہ لینے والے 3 افراد کو اسنائپرز نے حیوانیت کا شرمناک مظاہرہ کرتے ہوئے گولی مار کر شہید کر دیا، جب کہ 7 دیگر زخمی ہوئے، اسرائیلی فورسز نے اسپتال کے اندر سے سیکڑوں لوگوں کو بھاگنے کا حکم دینے والے پمفلٹ بھی گرائے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button