سیاسیات

نواز شریف مریم اور شہباز کے لئے کابینہ اور بیوروکریسی چننے میں مصروف

ملک بھر میں 8 فروری کو عام انتخابات کے بعد سربراہ مسلم لیگ (ن) نواز شریف منظرِعام سے غائب ہیں لیکن پسِ پردہ وہ وفاق اور پنجاب میں حکومت کی تشکیل کی کوششوں میں سرگرم ہیں۔مسلم لیگ (ن) کے ایک سینیئر رہنما نے بتایا کہ پارٹی سربراہ کابینہ اراکین کے انتخاب میں مصروف ہیں کیونکہ تمام تر پیچیدگیوں کے باوجود مسلم لیگ (ن) اور پیپلزپارٹی اپنے تیسرے پارٹنر متحدہ قومی موومنٹ (ایم کیو ایم) پاکستان کے ساتھ وفاقی حکومت بنائیں گے۔

شریف خاندان کے قریبی ذرائع نے بتایا کہ نواز شریف اپنی بیٹی مریم نواز (جوکہ مسلم لیگ ن کی جانب سے وزیراعلیٰ پنجاب کے لیے نامزد ہیں) کے ساتھ پنجاب کے بیوروکریٹس سے ملاقاتیں کر رہے ہیں تاکہ مریم نواز کو تربیت فراہم کرسکیں تاہم وہ انتخابات کے بعد پیدا ہونے والی سیاسی صورتحال میں زیادہ منظرِ عام پر نہیں آرہے۔

نواز شریف کو انتخابات سے قبل ان کی پارٹی نے وزیر اعظم کے عہدے کے لیے فیورٹ قرار دیا تھا تاہم انتخابات میں سادہ اکثریت حاصل کرنے میں ناکامی کے بعد انہیں اپنے چھوٹے بھائی شہباز شریف کے حق میں دستبردار ہونا پڑا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button