سیاسیات

چیف الیکشن کمشنر کیخلاف غداری کا مقدمہ چلایا جائے

جماعتِ اسلامی کے سینیٹر مشتاق احمد نے انتخابات میں مبینہ دھاندلی پر چیف الیکشن کمشنر سردار سکندر راجہ سے استعفے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ چیف الیکشن کمشنرکیخلاف غداری کامقدمہ چلایا جائے۔

تفصیلات کے مطابق چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی کی زیر صدارت اجلاس ہوا ، اجلاس میں جماعتِ اسلامی کے سینیٹر مشتاق احمد نے اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ 8 فروری کوجوالیکشن ہوااس میں بدترین دھاندلی ہوئی، دھاندلی کی تمام قسمیں ہم نےاس الیکشن میں دیکھی ہیں، یہ جعلی الیکشن تھا اس کے نتیجے میں بننےوالی حکومت بھی جعلی ہوگی۔

سینیٹر مشتاق احمد نے مطالبہ کیا کہ الیکشن کمیشن اپنی دستوری ذمہ داری ادانہ کرنے پرمعافی مانگے ، چیف الیکشن کمشنر مستعفی ہو، چیف الیکشن کمشنر کیخلاف آرٹیکل6 کےتحت کارروائی کی جائے۔

ان کا کہنا تھا کہ اس الیکشن میں قوم کےاربوں روپےخرچ ہوئے، جن لوگوں نےدھاندلی کی ان لوگوں سےیہ پیسہ واپس لیاجائے، سب نےمل کرعوام کےحق پر ڈاکا ڈالاہے۔

جماعتِ اسلامی کے سینیٹر نے کہا کہ الیکشن کمیشن غداری کامرتکب ہواہے، یہ عجیب وغریب الیکشن تھےجس میں حکومت پہلے بن گئی، یہ دھاندلی ہی نہیں بلکہ بیلٹ باکس،عوام کی حکمرانی کا ریپ ہواہے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ الیکشن والےدن موبائل اورانٹرنیٹ سروس بندکردی، ملک میں تین دن سے ٹوئٹر کی سروس بند ہے ،صرف دال میں کچھ کالا نہیں بلکہ پوری دال ہی کالی ہے۔

حافظ نعیم اور لیاقت علی چٹھہ کے بیان پر مشتاق احمد نے کہا کہ حافظ نعیم نےجب احتجاج شروع کیا تو ایساحلقہ جہاں سے وہ جیتے نہیں جتوادیاگیا، الیکشن میں دھاندلی سےمتعلق لیاقت علی چٹھہ نے کچھ توکچاچٹھا کھول دیا ہے ، بین الاقوامی ادارے بھی کہہ رہے ہیں پاکستان میں جمہوریت کی تنزلی ہورہی ہے۔

بلوچستان سے متعلق جے آئی سینیٹر کا کہنا تھا کہ بلوچستان سےباپ بیٹا ڈرگ مافیا،کےپی سےافغانی بھی پارلیمنٹ آئےہیں، جوڈرگ مافیاکےلوگ ہیں انہیں بھی کامیاب کرادیاگیا، بلوچستان،کےپی ،اندرون سندھ سےآوازیں اٹھ رہی ہیں کہ الیکشن بک گیا۔

انھوں نے سوال کیا کہ الیکشن اس لئے ہوتا ہے کہ بحرانوں سےنکلاجائے، لیکن یہ ایک ایساالیکشن ہواجس نےعوام کوبحرانوں میں دھکیل دیا، دھاندلی کرنے والےقوم کےمجرم ہیں، یہ پاکستان کےمستقبل سےکھیل رہےہیں۔

جے آئی سینیٹر نے انتخابات میں دھاندلی کی تحقیقات کیلئے بااختیار جوڈیشل کمیشن قائم کرنے کا مطالبہ کرتے ہویے کہا جوفارم45کےمطابق انکوائری کرے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ چند سرکاری نوکر بند کمروں میں بیٹھ کر25کروڑعوام کافیصلہ کریں گے، قوم نےغلامی سے آزادی اس لئے حاصل نہیں کی کہ دوبارہ غلام بن جائیں، لوگ جان چکے حکمرانی ہماراحق ہے ہم اپنے حق کیلئے ہر حد تک جائیں گے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button