سیاسیات

اپنے والد کو انصاف دلانا بینظیر کا خواب تھا، اداروں کے پاس داغ دھونے کا موقع ہے: بلاول بھٹو

پاکستان کے سابق وزیر خارجہ بلاول بھٹو نے سپریم کورٹ میں ذوالفقار علی بھٹو کو عدالت کی طرف سے دی جانے والی سزائے موت سے متعلق صدارتی ریفرنس کی سماعت کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ ان کی ماں اور پاکستان کی سابق وزیراعظم بینظیر بھٹو کا خواب تھا کہ وہ اپنے والد ذوالفقار علی بھٹو کو انصاف دلا سکیں۔

بلاول بھٹو کے مطابق ’اب یہاں ایک صدارتی ریفرنس سنا جا رہا ہے اور اب جج صاحبان یہ فیصلہ کریں گے کہ اس کیس میں کیا انصاف کیا گیا ہے۔ کیا آمریت کے دور میں ہونے والا بھٹو کا قتل درست فیصلہ ہے۔؟

ان کے مطابق اگر یہ درست فیصلہ نہیں تھا تو پھر ’ریمیڈی‘ کیا ہے۔ انھوں نے کہا کہ ’مجھے امید ہے کہ اعلیٰ عدلیہ ہمیں انصاف دے گی۔‘ بلاول بھٹو نے کہا کہ ’چیف جسٹس صاحب نے خود کہا تھا کہ بھٹو ریفرنس کیس عدلیہ کا امتحان ہے۔‘

بلاول بھٹو نے کہا کہ اس طریقے سے عدلیہ اپنے اوپر داغ کو بھی دھوئے گی اور باقی جو داغ دوسرے اداروں پر ہے، ان اداروں سے بھی ایک داغ دھونے کا ایک موقع ہمیں نظر آ رہا ہے۔

بلاول بھٹو نے کہا کہ ’صدارتی ریفرنس کے ذریعے تاریخ درست ہو سکے گی۔ تا کہ میں ایک حد طے کر سکیں کہ جو ماضی میں ہوا وہ غلط تھا، تا کہ ہم مستقبل کی طرف دیکھ سکیں۔‘

بلاول بھٹو نے کہا کہ ’عدلیہ یا کوئی اور ادارہ اس طرح کا سنگین جرم نہیں دہرائے گا۔‘ انھوں نے کہا کہ ’مجھے خوشی ہے کہ سپریم کورٹ کی پہلی خاتون جج اس کیس کے بینچ میں موجود ہیں۔‘

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button