سپیشل رپورٹ

آسٹریلیا جانے کے خواہشمند طلبا کے لیے اہم خبر

آسٹریلیا نے اپنے ملک میں اسٹوڈنٹ ویزا پر آنے والے افراد کی ریکارڈ تعداد کے بعد ویزا قوانین کو مزید سخت کر دیا۔

سرکاری اعداد و شمار سے ظاہر ہوتا ہے کہ آسٹریلیا نقل مکانی کرنے والوں کی تعداد ریکارڈ سطح پر پہنچ گئی ہے۔ رواں ہفتے سے آسٹریلیا غیر ملکی طلبا کے لیے ویزا کے سخت قوانین پر عملدرآمد شروع کر دے گا۔

طلبا اور گریجویٹ ویزوں کے لیے انگریزی زبان کی ریکوائرمنٹس میں ہفتے سے اضافہ ہو جائے گا۔

ان قوانین کے تحت حکومت کو یہ اختیار حاصل ہو جائے گا کہ ملک میں تعلیم حاصل کرنے والے بین الاقوامی طلبا کی بھرتی سے انسٹی ٹیوٹس کو روک سکے تاہم ایسا تب ہی ہوگا جب وہ بار بار قواعد کی خلاف ورزی کرتے پائے گئے۔

وزیر داخلہ کلیئر او نیل نے اپنے بیان میں کہا کہ اس ہفتے کے آخر میں کیے جانے والے اقدامات سے نقل مکانی کی سطح کو نیچے لانے میں مدد ملے گی۔

انھوں نے کہا کہ ہجرت کرنے والوں کے حوالے سے حکمت عملی کے تحت ہم اپنے وعدوں کو پورا کرتے ہوئے اس ٹوٹے ہوئے نظام کو ٹھیک کرنے کی کوشش کریں گے جو ہمیں ورثے میں ملا ہے۔

اب ایک نیا ’’جینوئن اسٹوڈنٹ ٹیسٹ‘‘ متعارف کرایا جائے گا تاکہ ان بین الاقوامی طلباء پر مزید کریک ڈاؤن کیا جا سکے جو بنیادی طور پر کام کرنے کے لیے آسٹریلیا آتے ہیں جبکہ وزیٹر ویزوں پر اب مزید قیام کی اجازت بھی نہیں دی جائے گی۔  ARY News

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button