فن اور فنکار

اذان نے غیر مسلم گلوکار کی زندگی کیسے بدلی

اکثر انسان کی زندگی میں آنے والی تبدیلی اس کی زندگی یکسر تبدیل کر دیتی ہے، ایسا ہی کچھ معروف گلوکار اور باکسر کے ساتھ ہوا جب دونوں نے اسلام قبول کیا۔

متحدہ عرب امارات میں دار البار سوسائٹی اور دی اسلامک انفارمیشن سینٹر کی جانب سے افطاری کا اہتمام کیا گیا تھا، جہاں سے کئی معروف باکسررز اور ریپرز نے اپنی داستان کے بارے میں بتایا کہ اسلام نے ان کی زندگی کس طرح بدل دی۔

سابق امریکی میوزک ریپر لون جنہوں نے اسلام قبول کرنے کے بعد اپنا نام امیر محدث رکھا۔

تقریب سے اظہار خیال میں ان کا کہنا تھا کہ 2005 میں میں متحدہ عرب امارات میں لے اوور کے لیے موجود تھا، جبکہ میں تنزانیہ کے لیے جا رہا تھا۔ یہ پہلی مرتبہ تھا، جب میں نے اذان کی آواز سنی۔
سابق گلوکار بتاتے ہیں کہ اس آواز نے میری توجہ خوب سمیٹی، جس کے بعد کئی ممالک گھوما، اور پھر بالآخر 2008 میں ابو ظہبی کے ایک ہوٹل میں میں مسلمان ہو گیا۔

گلوکار کے مطابق ازان کے لمحے نے ان کی زندگی کو بدلنے میں اہم کردار ادا کیا ہے۔

واضح رہے2011 میں بیلجئیم میں سابق گلوکار کو ہیروئین بیچنے کے الزام میں 14 سال قید کی سزا ہوئی تھی، تاہم گلوکار نے اس الزام کو مسترد کر دیا تھا، جبکہ آج تک ان کا موقف ہے کہ وہی بے قصور تھے
دوسری جانب اسی تقریب سے خطاب میں گامبین سویڈش پروفیشنل باکسر بادو جیک نے تقریب سے اظہار خیال کرتےہوئے بتایا کہ میرے والد مسلمان تھے، میں اپنی والدہ کے ساتھ رہ کر پلا بڑا ہوں۔ میں نے 16 سال کی عمر میں اسلام قبول کیا تھا JehanPakistan

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button