سپیشل رپورٹ

اسرائیل میں فلسطینیوں کی آواز ’الجزیرہ‘ پر پابندی کا قانون منظور

اسرائیل نے مظلوم فلسطینیوں کی آواز دبانے کے لیے قطری نشریاتی ادارے الجزیرہ سمیت غیرملکی میڈیا پر پابندی کی راہ ہموار کر لی۔

اسرائیلی پارلیمنٹ نے الجزیرہ پر پابندی کی راہ ہموار کرنے والا قانون منظور کر لیا۔ یہ بل حکومت کو اسرائیل میں الجزیرہ کی نشریات روکنے کا اختیار دیتا ہے۔

اے ایف پی اور ٹائمز آف اسرائیل کے مطابق وزیر اعظم نیتن یاہو نے کنیسٹ سے بل کو منظور کرنے کا مطالبہ کیا تھا اور "الجزیرہ کو بند کرنے کے لیے فوری کارروائی” کرنے کا وعدہ کیا تھا۔

یہ قانون پیر کی شام 10 کے مقابلے 70 ووٹوں سے منظور ہوا جس سے  حکومت کو اسرائیل میں غیرملکی چینلز کے دفاتر کو بند کرنے کا اختیار مل جائے گا۔

اسرائیلی پارلیمنٹ کی جانب سے بل کی منظوری کے فوراً بعد بھیجی گئی ایک سوشل میڈیا پوسٹ میں وزیراعظم نے اس قانون کا خیرمقدم کیا اور کہا کہ الجزیرہ "اب اسرائیل سے نشریات نہیں کرے گا۔

وزیر مواصلات شلومو کارہی نے آج کہا کہ الجزیرہ "آنے والے دنوں میں بند ہو جائے گا”۔ ARY News

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button