تازہ ترینخبریںپاکستان سے

500 یا زائد ڈالرز خریدنے والوں کیلئے بائیومیٹرک تصدیق لازمی قرار

بینک کے مطابق اس سے قبل کوئی بھی شخص قومی شناختی کارڈ کی ایک نقل فراہم کرکے ایکسچینج کمپنیوں سے ڈالر حاص کرسکتا تھا، یہ شرط 22 اکتوبر 2021 سے لاگو ہوگی۔

اسٹیٹ بینک آف پاکستان (ایس بی پی) نے اوپن مارکیٹ سے ڈالر خریدنے پر ایک اور پابندی عائد کرتے ہوئے تمام افراد کے لیے اوپن مارکیٹ سے 500 یا اس سے زائد ڈالر خریدنے والوں کے لیے بائیومیٹرک تصدیق لازمی کر دی ہے۔

دوسری جانب بدھ کے روز ڈالر کی قیمت 171 روپے کی نئی بلند ترین سطح پر جا پہنچی۔

ایچ ٹی وی پاکستان کی رپورٹ کے مطابق اسٹیٹ بینک سے جاری بیان میں کہا گیا کہ ‘ایکسچینج کمپنیوں کے لیے لازمی ہوگا کہ وہ 500 ڈالر یا اس سے زائد کی کرنسی فروخت اور ترسیلات زر پر بائیومیٹرک تصدیق کی جائے۔

بینک کے مطابق اس سے قبل کوئی بھی شخص قومی شناختی کارڈ کی ایک نقل فراہم کرکے ایکسچینج کمپنیوں سے ڈالر حاص کرسکتا تھا، یہ شرط 22 اکتوبر 2021 سے لاگو ہوگی۔

یہ بڑا قدم بظاہر ملک سے افغانستان میں ڈالر کے اخراج کو روکنے کے لیے اٹھایا گیا ہے جس نے اوپن مارکیٹ میں ڈالر کی طلب میں نمایاں اضافہ اور شرح تبادلہ کو غیر مستحکم کیا۔

امریکی ڈالر کی زیادہ طلب کے مقابلے میں مقامی کرنسی کی تیزی سے گراوٹ پر قابو پانے کے لیے اسٹیٹ بینک پہلے ہی کئی اقدامات کر چکا ہے۔

اس سے قبل ایکسچینج کمپنیاں میڈیا کے ذریعے اس بات کو اجاگر کرچکی ہیں کہ افغانستان کے لیے ڈالرز کا بہاؤ بہت زیادہ ہے جبکہ فچ ریٹنگ کمپنی نے بھی حال ہی میں اس مسئلے کو شرح تبادلہ کو غیر مستحکم کرنے کی ایک وجہ قرار دیا ہے۔

اسٹیٹ بینک کے اقدامات کے مطابق افغانستان جانے والے ہر شخص کو زیادہ سے زیادہ ایک ہزار ڈالر فی دورے کی اجازت ہوگی، جس کی سالانہ حد 6 ہزار ڈالر ہے۔

Leave a Reply

Back to top button